We are committed to reporting the facts and in all situations avoid the use of emotive terms.

بریکنگ نیوز
english logo

میں نے اس خاتون کو "بوسہ” نہیں دیا: ٹرمپ کی ٹوئیٹ

میں نے اس خاتون کو "بوسہ” نہیں دیا: ٹرمپ کی ٹوئیٹ

نیویارک (یو این این )امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ایک خاتون کی جانب سے اْس دعوے کی یکسر تردید کی ہے جس میں خاتون نے امریکی اخبار Washington Post کو تصدیق کی تھی کہ ٹرمپ اور ان کے درمیان "بوسے” کا عمل ہوا تھا۔ ٹرمپ نے اپنی ٹویٹ میں واقعے سے قطعی انکار کرتے ہوئے کہا کہ "ایک ایسی خاتون جس کو میں جانتا بھی نہیں اور میرے علم کے مطابق کبھی ملا ہی نہیں، وہ جھوٹے اخبار واشنگٹن پوسٹ میں بول رہی ہے کہ میں نے 12 سال قبل ٹرمپ ٹاور کے برآمدے میں (دو منٹ تک) اسے بوسہ دیا۔ ایسا قطعا کچھ نہیں ہوا، ایک عوامی مقام پر کوئی یہ کیسے کر سکتا ہے جب کہ وہاں سکیورٹی بھی موجود ہو”۔ مذکورہ امریکی اخبار نے منگل کے روز ایک مرتبہ پھر خاتون ریسپشنسٹ ریچل کروکس کے اس الزام کو شائع کیا کہ ٹرمپ نے مین ہیٹن میں واقع ٹرمپ ٹاور کی لفٹ کے سامنے زبردستی اس کو بوسہ دیا۔ کروکس نے پہلی مرتبہ یہ الزام ٹرمپ کی صدارتی انتخابی مہم کے آغاز سے قبل کیا تھا۔ ٹرمپ کی انتخابی مہم کے دوران 11 خواتین نے ماضی میں ٹرمپ کی جانب سے جنسی ہراسیت کا نشانہ بنائے جانے کی شکایت کی۔ ٹرمپ نے دھمکی دی تھی کہ صدارتی انتخابات جیتنے کے بعد وہ ان تمام خواتین کے خلاف عدالتی چارہ جوئی کریں گے تاہم ٹرمپ نے ایسا نہیں کیا۔ ریچل کروکس کے مطابق 2006 میں جب یہ واقعہ پیش آیا تو ان کی عمر 22 برس تھی۔ یاد رہے کہ کروکس نے ٹرمپ کی انتخابی مہم کے دوران دو خواتین کے ساتھ ایک پریس کانفرنس میں شرکت کی تھی جنہوں نے ٹرمپ پر ہراسیت کا الزام عائد کیا۔ جنسی ہراسیت کے ان الزامات نے ریپبلکن امیدوار کے حق میں خواتین کے ووٹوں پر کوئی اثر نہیں ڈالا اور انتخابات کا اختتام ڈیموکریٹک خاتون امیدوار ہیلری کلنٹن کی شکست کے ساتھ ہوا۔

Translation

اداریہ

آج کی تصویر

مقبول ترین

Whatsapp نیوز سروس

Advertise Here

ضرورت نمائیندگان

روزنامہ جواب

ضرورت نمائیندگان

Coverage

Currency

WP Facebook Auto Publish Powered By : XYZScripts.com