We are committed to reporting the facts and in all situations avoid the use of emotive terms.

بریکنگ نیوز
english logo

روس سے برطانوی سفارتکاروں کو نکالنے سے حقائق نہیں بدلیں گے‘برطانوی وزیر اعظم

روس سے برطانوی سفارتکاروں کو نکالنے سے حقائق نہیں بدلیں گے‘برطانوی وزیر اعظم

لند ن(یو این این)برطانوی وزیر اعظم تھریسا مینے کہا ہے کہ روس کی جانب سے برطانیہ کے 23 سفارتکاروں کو ملک سے نکالے جانے سے برطانوی شہر میں سابق ڈبل ایجنٹ کو زہر دیئے جانے کے معاملے کے حقائق نہیں بدلیں گے۔ فرا نسیسی خبر رساں ایجنسی کے مطابق تھریسا مے نے اپنی جماعت ’کنزرویٹو پارٹی‘ کے اسپرنگ فورم کو بتایا کہ ’روس بین الاقوامی قوانین کی برملا خلاف ورزی کر رہا ہے، جبکہ برطانیہ آنے والے دنوں میں اگلے اقدامات پر غور کرے گا۔انہوں نے کہا کہ ’روس کے اس ردعمل سے یہ حقائق نہیں بدل جائیں گے کہ برطانوی سرزمین پر دو افراد کے قتل کی کوشش کی گئی، جس کے لیے سوائے اس کے کوئی متبادل نتیجہ نہیں ہے کہ روس واقعے کا قصوروار ہے۔‘برطانوی وزیر اعظم نے روس پر برطانوی شہر سالِسبری میں سابق جاسوس سرگئی اسکِریپَل اور اور ان کی بیٹی یولیا کو 4 مارچ کو زہر دینے کا الزام لگایا، جس سے بعد دونوں زندگی اور موت کی کشمکش میں مبتلا ہیں۔انہوں نے خبردار کیا کہ ’برطانیہ اپنی سرزمین پر برطانوی شہریوں اور دیگر کی زندگیوں کو روسی حکومت کی طرف سے درپیش خطرات کو برداشت نہیں کرے گا، تاہم برطانیہ کا روسی عوام سے کوئی اختلاف نہیں ہے۔رواں ہفتے کے اوائل میں برطانیہ نے زہر دینے کے واقعے میں روس کے 23 سفارتکاروں کو ملک سے نکالنے اور اس سے اعلیٰ سطح کے تعلقات معطل کرنے کا اعلان کیا تھا۔ہفتہ کے روز ماسکو نے ردعمل دیتے ہوئے برطانیہ کے بھی 23 سفارتکاروں کو ملک سے نکلنے کا حکم دیا تھا۔روس کا کہنا تھا کہ وہ باہمی ثقافتی تعلقات کے لیے ملک میں کام کرنے والی بین الاقوامی تنظیم برٹش کونسل کی سرگرمیاں بھی روک دے گیا۔اس بیان پر برٹش کونسل نے اپنے بیان میں کہا کہ ’ہم اس اقدام پر انتہائی مایوسی ہوئی ہے۔‘

Translation

اداریہ

آج کی تصویر

مقبول ترین

Whatsapp نیوز سروس

Advertise Here

ضرورت نمائیندگان

روزنامہ جواب

ضرورت نمائیندگان

Coverage

Currency

WP Facebook Auto Publish Powered By : XYZScripts.com