We are committed to reporting the facts and in all situations avoid the use of emotive terms.

بریکنگ نیوز
english logo

بنگلہ دیش : دینی مدرسے میں طلبہ سے ضبط کیے گئے 500 موبائل فونز نذر آتش

بنگلہ دیش : دینی مدرسے میں طلبہ سے ضبط کیے گئے 500 موبائل فونز نذر آتش

بنگلہ دیش (یو این این)میں ایک دینی مدرسے کی انتظامیہ نے طلبہ سے ضبط کیے گئے کم سے کم پانچ سو موبائل فونز کو پیٹرول چھڑک کر نذر آتش کردیا ہے۔ضلع چٹاگانگ میں واقع مدرسہ الجمعیت الاہلیہ دارالعلوم معین الاسلام کی انتظامیہ نے مختلف درجوں میں زیر تعلیم طلبہ سے یہ اسمارٹ فون ضبط کیے تھے۔ایک طالب علم نے بتایا ہے کہ انتظامیہ نے مدرسے کی حدود ہی میں ضبط شدہ موبائل فون سیٹوں کے دو ڈھیر لگا ئے اور پھر ان پر پیٹرول چھڑک کر آگ لگا دی۔مدرسے کی انتظامیہ کے ذمے داروں نے دارالاقامہ ( ہوسٹل) میں مقیم طلبہ کے کمروں میں جا کر جامہ تلاشی لی تھی ، ان کے موبائل فون چیک کیے تھے اور ان میں قابل اعتراض مواد والے فون قبضے میں لے لیے تھے۔اس مدرسے کے ایک سینیر استاد مفتی جاسم الدین نے بنگلہ دیشی اخبار ڈھاکا ٹرائبون کو بتایا ہے کہ طلبہ کوموبائل فونز پر گانوں اور رقص کی ویڈیوز نہ دیکھنے کی ہدایت کی گئی تھی۔ہم نے وہی موبائل فونز ضبط کیے ہیں جن میں ایسی ویڈیوز تھیں۔انھوں نے مزید کہا کہ ’’طلبہ کسی ہنگامی صورت میں انتظامیہ کی اجازت سے موبائل فونز استعمال کرسکتے ہیں لیکن ان موبائل فونز میں گانوں اور ڈانس کی ویڈیوز سے تدریسی ماحول خراب ہوتا ہے‘‘۔ نومبر 2017ء میں بنگلہ دیش کی ایک سخت گیر جماعت حفاظت اسلام کے سربراہ شاہ احمد شافی نے کہا تھا کہ یہود نے مسلمانوں کے اخلاق تباہ کرنے کے لیے موبائل فونز پھیلائے ہیں۔انھوں نے چٹا گانگ میں ایک مذہبی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہا تھا کہ ’’ موبائل فونز ہمارے سماجی نظام کو مکمل طور پر تباہ کررہے ہیں۔ہمارے بچوں اور بچیوں کو ان موبائل فونز سے دور رکھیں‘‘۔

Translation

اداریہ

آج کی تصویر

مقبول ترین

Whatsapp نیوز سروس

Advertise Here

ضرورت نمائیندگان

روزنامہ جواب

ضرورت نمائیندگان

Coverage

Currency

WP Facebook Auto Publish Powered By : XYZScripts.com