We are committed to reporting the facts and in all situations avoid the use of emotive terms.

بریکنگ نیوز
english logo

ہیلمٹ کا استعمال زندگیوں کو محفوظ بناتا ہے ، آسٹیوپوروسس و ٹراما مینجمنٹ پر جنر ل ہسپتال میں سیمینار

ہیلمٹ کا استعمال زندگیوں کو محفوظ بناتا ہے ، آسٹیوپوروسس و ٹراما مینجمنٹ پر جنر ل ہسپتال میں سیمینار

ٹریفک و صنعتی حادثات کیلئے آرتھو پیڈک ڈاکٹرز اپنی پیشہ وارانہ مہارت میں اضافہ کریں، پروفیسر محمد طیب
حاملہ اور دودھ پلانے والی خواتین کیلئے دودھ ، دہی ، پنیر اور کیلشیم والی دیگر اشیاء کا استعمال نہایت ضروری ہے
ہڈیوں کے بھر بھرے پن سے بچاؤ کیلئے متوازن غذا ور ورزش ضروری ہے :پروفیسر عرفان محبوب و دیگر مقررین کا خطاب
لاہور(یو این این )پرنسپل امیرالدین میڈیکل کالج و لاہور جنرل ہسپتال پروفیسر ڈاکٹر محمد طیب نے کہا کہ بڑھتے ہوئے ٹریفک و صنعتی حادثات میں ٹراما مینجمنٹ کی اہمیت بہت زیادہ بڑھ گئی ہے اور ٹراما مینجمنٹ سپیشلسٹی کے طور پر اہمیت اختیار کرگیا ہے لہذا آرتھوپیڈک سے منسلک ڈاکٹرزکو اس شعبے میں تعلیم و تربیت پر خصوصی توجہ دیتے ہوئے اپنی پیشہ وارانہ مہارت کو دور جدید کے تقاضوں کے مطابق بڑھانا ہو گاجبکہ ٹریفک قوانین کی پابندی کر کے سڑکوں پر ہونے والے حادثات کو کم کرنے کے علاوہ موٹرسائیکل سواروں کے لئے ہیلمٹ کا استعمال ان کی زندگیوں کو محفوظ بنا سکتا ہے ۔ٹریفک قوانین کی پاسداری کو یقینی بنانے کے لئے والدین ، اساتذہ ، سماجی تنظیموں اور میڈیا کو بھی اپنا رول ادا کرنا ہو گا تا کہ نوجوان احتیاطی تدابیر پر عمل کر اپنی قیمتی زندگیوں کو بچا سکیں ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے آسٹیوپوروسس و ٹراما مینجمنٹ کے حوالے سے جنرل ہسپتال میں منعقدہ سیمینار اور واک کے اختتام پر میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ سیمینار سے پروفیسر ڈاکٹر عرفان محبوب ، پروفیسر میاں محمد حنیف،ایم ایس ڈاکٹر محمود صلاح الدین، ڈاکٹر عثمان نذیر گل و دیگر طبی ماہرین نے کیا جبکہ واک میں ڈائریکٹر ایڈمنسٹریشن ڈاکٹر رانا محمد شفیق ، نرسنگ انتظٖامیہ ، مختلف شعبوں کے ڈاکٹرز ، نرسیں اور پیرامیڈکس نے شرکت کی ۔پروفیسر محمدطیب اور پروفیسر عرفان محبوب کا کہنا تھا کہ ہڈیوں کے بھربھر ے پن ( آسٹیوپوروسس) کی بیماری سے بچاؤ کیلئے متوازن خوراک کے ساتھ ورزش اور صحت مند زندگی ناگزیر ہے ۔ اس مرض سے زیادہ تر خواتین اور عمر رسیدہ افراد متاثر ہوتے ہیں اور کیلشیم کی کمی کی وجہ سے ہڈیاں ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہو جاتی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ غذائیت کی کمی کی وجہ سے حاملہ خواتین پہلے ہی صحت کے مسائل سے دوچار ہوتی ہیں اور جسم میں کیلشیم کی کمی اور ہڈیوں کو بھی کمزور کر دیتی ہیں ۔پرنسپل جنرل ہسپتال اور معروف گائناکالوجسٹ پروفیسر ڈاکٹر محمد طیب نے کہا کہ بچوں کی پیدائش میں مناسب وقفہ ہونا نہ صرف عام جسمانی صحت کے لئے ضروری ہے بلکہ خواتین کی ہڈیوں کی مضبوطی کا بھی ضامن ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے ملک میں غربت ، پسماندگی اور ناخوانگی کی وجہ سے لوگ بہتر خوراک کا انتخاب نہیں کر سکتے جس کے نتیجے میں انسانی جسم کی ہڈیاں لاغرہو جاتی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جدید طرز زندگی میں تبدیلی روزانہ ہلکی ورزش ، تمباکو نوشی سے پرہیز ، حاملہ اور دودھ پلانے والی خواتین کیلئے روزانہ کی بنیاد پر دودھ ، دہی ، پنیر اور کیلشیم والی دیگر اشیاء کا استعمال نہایت ضروری ہے۔ طبی ماہرین کا کہنا تھا کہ آسٹیوپوروسس کے نتیجے میں سب سے زیادہ کولہے ، ریڑھ کی ہڈی ، پسلی اور کلائی کی ہڈیاں متاثر ہوتی ہیں اور جسمانی وزن کی وجہ سے بیشتر کیسز میں بھی کولہے کی ہڈی فریکچر کا شکار ہو جاتی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ آسٹیوپوروسس سے محفوظ رہنے کے لئے ابتدا ء ہی سے احتیاطی تدابیر اختیار کر لی جائیں تو ہڈیا ں طویل عرصہ تک مضبوط و توانا رہتے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ اگر غذا سے کیلشیم کی مطلوبہ مقدار حاصل نہ ہو سکے تو اسے گولیوں یا دیگر مصنوعات سے بھی پورا کریں لیکن یہ خیال رکھیں کہ دن بھر میں یہ مقدار 2 ہزار ملی گرام سے نہ بڑھے،سیمینار میں سینئر ڈاکٹر زسمیت میڈیکل کے طلبا و طالبات کے سوالوں کے جوابات بھی دیے اور جدید میڈیکل ریسرچ کے حوالے سے اُن کا عملی حل بتایا۔اس موقع پر میڈیکل سٹوڈنٹس کی بڑی تعداد بھی موجود تھے۔

Translation

اداریہ

آج کی تصویر

مقبول ترین

Whatsapp نیوز سروس

Advertise Here

ضرورت نمائیندگان

روزنامہ جواب

ضرورت نمائیندگان

Coverage

Currency

WP Facebook Auto Publish Powered By : XYZScripts.com