We are committed to reporting the facts and in all situations avoid the use of emotive terms.

بریکنگ نیوز
english logo

پاکستان میں ہر سال ٹی بی کے 5لاکھ نئے کیس سامنے آرہے ہیں،وزیر صحت

پاکستان میں ہر سال ٹی بی کے 5لاکھ نئے کیس سامنے آرہے ہیں،وزیر صحت

15ہزار ایسے مریض ہیں جن میں ٹی بی کی ادویات کا اثر زائل کرنے کی صلاحیت پیدا ہورہی ہے
ڈاکٹر یاسمین راشد کا ساملی سینی ٹوریم مری کا دورہ، عوامی سطح پر آگاہی مہم چلانے کی ضرورت پر زور
لاہور (یو این این )وزیر صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد نے اس بات پر تشویش کا اظہار کیا ہے کہ پاکستان میں ہر سال تپ دق (ٹی بی) کے 5لاکھ نئے کیس سامنے آرہے ہیں۔ ان میں سے 15ہزار ایسے مریض ہیں جن میں ٹی بی کی ادویات کا اثر زائل کرنے کی صلاحیت پیدا ہورہی ہے۔ جمعرات کو مری میں تپ دق کے علاج کے مرکز ساملی سینی ٹوریم کے دور میں گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے عالمی ادارہ صحت کی حالیہ رپورٹ کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ادویات کے خلاف مزاحمت کے مریضوں کی تعداد کے حوالے سے پاکستان دنیا کا چوتھا بڑا ملک ہے۔ اس کی بڑی وجہ یہ ہے کہ مریض علاج کے دوران ادویات کا استعمال چھوڑ دیتے ہیں جس سے تپ دق کا وائرس طاقتور ہوجاتا ہے۔ ضرورت اس امر کی ہے کہ ٹی بی سے بچاؤ کے لئے عوامی سطح پر آگاہی مہم چلائی جائے۔ اس جان لیوا مرض کے خاتمے کے لئے تمام طبقے حکومتی کوششوں کا ساتھ دیں۔ ڈاکٹر یاسمین راشد نے کہا کہ پنجاب میں عالمی ادارہ صحت اور دیگر پارٹنرز اداروں کے تعاون سے ٹی بی کے مریضوں کا پروگرام ’ڈاٹس‘ چلایا جارہا ہے۔ ڈاٹس ٹی بی کے علاج کا مفید پروگرام اور مریضوں کے لئے امید کی روشنی ہے۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب میں محکمہ صحت کے زیراہتمام ٹی بی کا الگ پروگرام کام کرررہا ہے۔ تپ دق پر کنٹرول کے لئے حکومت ہر ممکنہ وسائل استعمال کرے گی۔ وزیر صحت نے سید محمد حسین گورنمنٹ ٹی بی سینی ٹوریم کے تمام شعبوں کا معائنہ اور طبی سہولیات کی فراہمی پر اظہار اطمینان کیا۔ انہوں نے کہا کہ ساملی سینی ٹوریم ٹی بی کا مثالی شفاعی مرکز ہے۔ حکومت یہاں مزید سہولیات کی فراہمی کے لئے خصوصی پیکیج پر غور کرے گی۔

Translation

اداریہ

آج کی تصویر

مقبول ترین

Whatsapp نیوز سروس

Advertise Here

ضرورت نمائیندگان

روزنامہ جواب

ضرورت نمائیندگان

Coverage

Currency

WP Facebook Auto Publish Powered By : XYZScripts.com