We are committed to reporting the facts and in all situations avoid the use of emotive terms.

بریکنگ نیوز
english logo

وہی معاشرے ترقی کرتے ہیں جہاں حق تسلیم اور نا انصافی کی حوصلہ شکنی کی جاتی ہے، گورنر

وہی معاشرے ترقی کرتے ہیں جہاں حق تسلیم اور نا انصافی کی حوصلہ شکنی کی جاتی ہے، گورنر

لاہور(یو این این ) گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور نے کہا ہے کہ جمہوریت کا تسلسل ، حکمرانوں کا وقار اور حکومتوں کی کارکردگی صرف ایک نکتے پر منحصر ہے کہ وہاں پر بسنے والی عوام اپنے بنیادی حقوق سے بہرہ ور ہیں اور ترقی و خوشحالی جیسی نعمتوں سے فیض یاب ہو رہے ہیں ۔اُنہوں نے کہا کہ وہی معاشرے ترقی کرتے ہیں جہاں حق کو تسلیم اور نا انصافی کی حوصلہ شکنی کی جاتی ہے ۔ افسران کی محبت بھری توجہ اور نظر سے عام آدمی کے آدھے مسائل حل ہو جاتے ہیں ۔یہ بات اُنہوں نے جمعہ کے روز نیشنل سکول آف پبلک پالیسی مینجمنٹ کالج میں109 نیشنل مینجمنٹ کے شرکاء میں سرٹفیکیٹ تقسیم کرنے کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ تقریب میں چیف سیکرٹری پنجاب یوسف نسیم کھوکھر ،ریکٹر نیشنل سکول آف پبلک پالیسی کے علاوہ دیگر افسران نے شرکت کی ۔گورنر پنجاب نے کہا کہ بلا شبہ آپ اس ملک کی علم و فراست کا ایک محور تصور کئے جاتے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ آپ کی اعلیٰ تعلیم اور پختہ تجربہ ملک کی بنیادوں کو مزید مضبوط کرنے کے لئے انتہائی سود مند ہے اور عوامی مسائل کے حل کے لئے کلیدی کردار ادا کرتا ہے ۔اُنہوں نے کہا کہ ہماری حکومت اس بات پر پورا یقین رکھتی ہے کہ اداروں کے مستحکم ہونے اور ان کی بالادستی کو قائم رکھنے سے ہی ملک کی بنیادیں مضبوط ہوتی ہیں ، عوام طاقت ور ہوتی ہے ،آئین کی بالادستی قائم ہوتی ہے اور جمہوریت کا پودا تناور درخت بن جاتا ہے ۔ گورنرنے کہا کہ قومیں یا ملک، حکمران یا افسران بالا سے نہیں بلکہ خدمت ، نیت اور ہمت سے بنتی ہیں ۔ اُنہوں نے کہا کہ دہشت گردی کی جنگ میں 50 ہزار پاکستانی بشمول افواج پاکستان ، پولیس ، انٹیلی جنس اداروں کے افسران شہید ہوئے ہیں جبکہ 100 بلین ڈالر کا مالی نقصان ہوا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ بدقسمتی سے بین الاقوامی سطح پر ہماری قربانیوں کو سراہا نہیں گیا بلکہ ڈومور کا تقاضا کیا گیا ۔اُنہوں نے کہا کہ عالمی طاقتیں تمام وسائل کے باوجود افغانستان سے دہشت گردی کا خاتمہ نہیں کر سکیں ۔ پاکستان نے اکیلے افواج پاکستان ، پولیس و دیگر اداروں اور عوام کی حمائت سے دہشت گردی کا خاتمہ کر دیا ہےگورنر پنجاب نے کہا کہ تحریک انصاف کی حکومت نے اداروں سے سیاسی اثر و رسوخ ختم کر دیا ہے اور اب افسران کی پوسٹنگ و ٹرانسفر میرٹ پر ہو گی اور سیاسی مداخلت نہیں ہو گی۔ انہوں نے کہا کہ حکومت ’’رائٹ پرسن فار رائٹ جاب ‘‘ کی پالیسی پر عمل پیرا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ شہریوں کو پینے کا صاف پانی میسر نہیں ،گندا پانی پینے سے لوگ ہیپا ٹائٹس کا شکار ہو رہے ہیں اور ملک سے ٹی بی کا خاتمہ نہیں ہو سکا ۔ اُنہوں نے افسران پر زور دیا کہ ان مسائل کے حل کے لئے ہمیں مل کر کام کرنا ہو گا ۔بعد ازاں، گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور نے ایکسپو سنٹر لاہور میں پاکستان فرنیچر کونسل کے زیر اہتمام دسویں انٹریئر پاکستان ایکسپو کا افتتاح کیا۔ اس موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے گورنر پنجاب نے کہا کہ کسی کو سیاسی انتقام کا نشانہ نہیں بنایا جائے گا ۔ جس نے کرپشن کی ہے اور قانون توڑا ہے اس کا احتساب کیا جائے گا ۔ انہوں نے کہا کہ 70 سال کی غلط معاشی پالیسیوں کی بدولت معاشی حالات بہت گھمبیر ہیں ۔ ایک سوال کے جواب میں اُنہوں نے کہا کہ سابقہ حکومت کے تمام منصوبوں کو پایہ تکمیل تک پہنچایا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ فرنیچر انڈسٹری فروغ پا رہی ہے اور یہ نہ صرف ملکی ضروریات کو پورا کر رہی ہے بلکہ ایکسپورٹ بھی کر رہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ وفاقی و صوبائی حکومتیں ان سے ہر ممکن تعاون کرے گی ۔اِس موقع پر گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور نے نمائش میں لگے مختلف سٹالوں کا معائنہ کیا اور کام کو سراہا ۔ انہوں نے کہا کہ پاکستانی مصنوعات کسی دوسرے ممالک کے معیار سے کم نہیں ۔دریں اثنا، گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور نے نیشنل کالج آف آرٹس میں ایم اے(آنرز) کے طلباء کی طرف سے ویزول(Visual) آرٹ کا افتتاح کیا۔ اُنہوں نے طلباء کی طرف سے اکٹھے کئے گئے فن پاروں کو دیکھا اور طلبا و طالبات کی تخلیقی صلاحیتوں کو سراہا۔گورنر پنجاب نے اِس موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ نیشنل کالج آف آرٹس ،آرٹ کی ترقی میں نمایاں کردار ادا کررہا ہے۔ اُنہوں نے کہا کہ طلباء نے اپنے آئیڈیاز کو کینوس پر اتارا ہے جو قابل تعریف ہے ۔ گورنر نے کہا کہ آرٹ کے شعبے کو پروموٹ کرنے کے لئے حکومت ہر ممکن تعاون کرے گی۔ 
*

Translation

اداریہ

آج کی تصویر

مقبول ترین

Whatsapp نیوز سروس

Advertise Here

ضرورت نمائیندگان

روزنامہ جواب

ضرورت نمائیندگان

Coverage

Currency

WP Facebook Auto Publish Powered By : XYZScripts.com