We are committed to reporting the facts and in all situations avoid the use of emotive terms.

بریکنگ نیوز
english logo

نیب لاہورکیجانب سے ڈبل شاہ کیس کے 1474 متاثرین میں 16 کروڑ 96 لاکھ روپے کے چیک تقسیم

نیب لاہورکیجانب سے ڈبل شاہ کیس کے 1474 متاثرین میں 16 کروڑ 96 لاکھ روپے کے چیک تقسیم

کل 6490 میں سے 3249متاثرین کو مکمل رقم واپسی کی جاچکی، 1ارب 20کروڑ روپے متاثرین کو واپس لوٹائے جا چکے
سپریم کورٹ میں فراہم کردہ لسٹ کیمطابق 70 فیصد ہاؤسنگ سوسائٹیاں غیر قانونی ہیں، ڈی جی شہزاد سلیم کا تقریب سے خطاب
لاہور(یو این این )چیئر مین نیب جسٹس جاوید اقبال کی جاری کردہ ہدایات کی روشنی میں نیب لاہور میں المعروف ڈبل شاہ کیس کے متاثرین میں ملزمان سے وصول کی گئی رقوم کے چیک تقسیم کرنیکی تقریب کا انعقاد کیا گیا۔ ڈائریکٹر جنرل نیب لاہور شہزاد سلیم نے ڈبل شاہ فراڈ کے 1474 متاثرین میں 16 کروڑ 96 لاکھ 80 ہزار روپے کی رقم پر مشتمل تیسری قسط کے چیک تقسیم کئے ۔ ڈی جی نیب لاہور کا تقریب کے شرکاء سے خطاب کے دوران کہنا تھا کہ عوام سے دھوکہ دہی کے اس کیس میں نیب لاہور نے 2007 میں ملزمان کے خلاف کارروائی کا آغاز کیا تاہم کل 6490 متاثرین میں سے 3249متاثرین کو انکی مکمل رقم (100فیصد) کی واپسی کی جاچکی ہے جبکہ 3241 متاثرین کو انکی 80فیصد رقم واپس لوٹائی جا چکی ہے لہذا 1 ارب40کروڑ میں سے 1ارب 20کروڑ روپے متاثرین کو واپس لوٹائے جا چکے ہیں۔ اس دوران انکا کہنا تھا کہ ڈبل شاہ معروف نام ہے جس نے عوام کو پیسے ڈبل کرنے کے نام پر لوٹا۔ عوام لوگوں کی باتوں پر فوری یقین کرتے ہوئے ضروری جانچ پڑتال کئے بغیرہی سرمایہ کاری کرتے ہیں بعد ازاں پچھتاوا انکا مقدر بن جاتا ہے۔ سال 2018میں نیب لاہور کیجانب سے ملزمان سے4140ملین روپے برآمد کئے گئے ہیں۔ ہاؤسنگ سیکٹر میں ہونیوالے فراڈ کے حوالے سے انکا کہنا تھا کہ سپریم کورٹ میں ہاؤسنگ سوسائٹیوں کی فراہم کردہ لسٹ کیمطابق ستر (70) فیصد ہاؤسنگ سوسائٹیاں غیر قانونی ہیں۔ ماڈل ہاؤسنگ انکلیو کے مالک فرحان چیمہ کی دو سے تین ارب کی پراپرٹی قبضے میں لی گئیں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ فیروز پور سٹی کیس میں ملزمان سے 2ارب سے زائد کی رقم ریکارڈ پلی بارگین کی گئی ۔ پاک عرب ہاؤسنگ سوسائٹی کی انتظامیہ کو دی گئی ڈیڈ لائن کیمطابق انتظامیہ 6ماہ کے دوران 18ارب مالیت کے پلاٹ متاثرین کو واپس لوٹائیں گے۔ ایلیٹ ٹاؤن میں عوام کو 10کروڑ روپے سے محروم کیا گیا نیب لاہور نے ملزمان سے 36کروڑ سے زائد برآمد کروائے گئے جنہیں436متاثرین میں تقسیم کیا گیا۔یہ سب چیئر مین نیب کی سربراہی میں نیب لاہور کے افسران کی انتھک محنت سے ہی ممکن ہو سکا۔تاثرین سے خطاب میں ان کا مزید کہنا تھا کہ نیب میں آنے والوں کی عزتِ نفس کا مکمل خیال رکھا جاتا ہے لیکن اگر نیب میں بلایا جاتا ہے تو سوال بھی ہونگے لیکن ان میں گنجائش نہیں ہو گی۔ تقریب کے اختتام پر متاثرین نے چیئر مین نیب جسٹس جاوید اقبال کی نگرانی میں ڈی جی نیب لاہور اور افسران کی کارکردگی کو سراہااور نیب پر اپنے مکمل اعتماد کا اظہار کیا۔

Translation

اداریہ

آج کی تصویر

مقبول ترین

Whatsapp نیوز سروس

Advertise Here

ضرورت نمائیندگان

روزنامہ جواب

ضرورت نمائیندگان

Coverage

Currency

WP Facebook Auto Publish Powered By : XYZScripts.com