We are committed to reporting the facts and in all situations avoid the use of emotive terms.

بریکنگ نیوز
english logo

میٹرک کی اسناد بوگس ثابت ہونے پر چار نرسوں کی خدمات محکمہ صحت کے سپرد

میٹرک کی اسناد بوگس ثابت ہونے پر چار نرسوں کی خدمات محکمہ صحت کے سپرد

تین نے جناح،گنگا رام اور لیڈی ایچیسن ہسپتال لاہور اور چوتھی نے سول ہسپتال ٹھٹھہ کراچی سے تربیت حاصل کی تھی
حکومتی پالیسی کے تحت ملازمت ملنے کے آغاز پر اسناد تصدیق کے لئے تعلیمی بورڈ بھجوائیں جو جعلی نکلیں، انتظامیہ جنرل ہسپتال
جعل سازی کی مرتکب نرسوں کی پاکستان نرسنگ کونسل سے رجسٹریشن بھی منسوخ کرائی جائے گی:ڈی جی نرسنگ پنجاب
لاہور(یو این این )بورڈ آف انٹر میڈیٹ اینڈ سکینڈری ایجوکیشن لاہور اور فیصل آباد سے میٹرک کی اسناد کی تصدیق نہ ہونے اور جعلی قرار دیے جانے پرجناح ،گنگا رام اور لیڈی ایچیسن ہسپتال لاہوراور سول ہسپتال ٹھٹھہ کراچی سے تربیت حاصل کرنے والی 4نرسوں کے خلاف کاروائی کرتے ہوئے انہیں نوکریوں سے برطرف کرنے کیلئے محکمہ صحت کو رپورٹ کرنے کی ہدایت کر دی ہے ۔یہ چاروں نرسیں لاہور جنرل ہسپتال میں کام کر رہی تھیں جنہیں مذکورہ ہسپتالوں میں نرسنگ کی تربیت حاصل کرنے کے بعد2016 اور 2017 میں پنجاب پبلک سروس کمیشن کی طرف سے گریڈ16 میں بھرتی کیا گیا تھا ۔حکومتی پالیسی کے مطابق لاہور جنرل ہسپتال کی انتظامیہ نے ملازمین کے کوائف اور تعلیمی اسناد کو تصدیق کیلئے بھیجا تو متعلقہ بورڈز نے جناح ہسپتال سے تربیت حاصل کرنے والی سعدیہ رشیداورمخمور تعریف،گنگا رام و لیڈی ایچیسن سے زاہدہ پروین اور سول ہسپتال ٹھٹھہ سے عاصمہ جاوید کی اسناد کو جعلی قرار دیا اور اُن کی تصدیق نہیں کی ۔ اس رپورٹ کی روشنی میں ایل جی ایچ انتظامیہ نے ان چاروں نرسز کے معاملات کو مزید انضباطی کاروائی کیلئے محکمہ صحت کو بھجوا دیا ہے ۔اس حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے ڈائریکٹر جنرل نرسنگ پنجاب کوثر پروین کا کہنا تھا کہ میڈیکل کے شعبے میں بوگس اسناد کے ساتھ کام کرنے والوں کو کسی طور برداشت نہیں کیا جا سکتا اور نہ ہی ایسے افراد کسی رعائیت کے مستحق ہیں ۔ڈی جی نرسنگ نے کہا کہ ایسے کیسز مستقل طور پر محکمہ صحت پنجاب کو بھیجے جاتے ہیں تاکہ اُن پر سخت ترین کاروائی کی جا سکے ۔انہوں نے بتایا کہ ان 4نرسوں کی رجسٹریشن کی منسوخی کیلئے پاکستان نرسنگ کونسل کو بھی لکھا جارہا ہے۔کوثر پروین نے مزید بتایا کہ بوگس اسناد کی بنیاد پر نوکری حاصل کرنے والوں سے تنخواہوں اور دیگر واجبات کی واپسی کیلئے بھی کاروائی کی جائے گی ۔ انہوں نے کہا کہ قواعدو ضوابط کے مطابق داخلہ کے وقت ان نرسوں کی اسناد کی نرسنگ سکولوں میں بھی تصدیق ہونا تھی اور اس امر کی بھی چھان بین کی جائے گی کہ کیوں وہاں ایسا نہیں ہوا اور اُن نرسنگ سکولوں کی پرنسپلزکے خلاف بھی ضابطے کی کاروائی عمل میں لائی جائے گی ۔ پرنسپل امیر الدین میڈیکل کالج اور ایم ایس لاہور جنرل ہسپتال نے اس حوالے سے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ یہاں کام کرنے والے تمام ملازمین کے تعلیمی کوائف و اسناد کی تیزی سے تصدیق کرائی جاتی ہے اور اس ضمن میں رکاوٹ بننے والے کسی بھی اہلکار کو سخت ترین کاروائی کیلئے تیار رہنا ہوگا ۔

Translation

اداریہ

آج کی تصویر

مقبول ترین

Whatsapp نیوز سروس

Advertise Here

ضرورت نمائیندگان

روزنامہ جواب

ضرورت نمائیندگان

Coverage

Currency

WP Facebook Auto Publish Powered By : XYZScripts.com