We are committed to reporting the facts and in all situations avoid the use of emotive terms.

بریکنگ نیوز
english logo

قومی احتساب بیورو لاہور کی سال 2018 ء کی کارکردگی رپورٹ

قومی احتساب بیورو لاہور کی سال 2018 ء کی کارکردگی رپورٹ

لاہور(یو این این ) قومی احتساب بیورو لاہور کی جانب سے سالانہ کارکردگی رپورٹ کا اجراء کر دیا گیا جس کے مطابق سال2018کے دوران نیب لاہور نے متعدد سنگِ میل عبور کئے تاہم اس دوران چیئر مین نیب اور عوام کی جانب سے نیب لاہور کے اقدامات کو مجموعی طور پر بھرپور پزیرائی حاصل رہی۔ ڈی جی نیب لاہور کیجانب سے ریجنل بیورو کی سالانہ مجموعی کارکردگی کے حوالے سے تفصیلات فراہم کرتے ہوئے بتایا گیا کہ نیب نے معاشرے سے بدعنوانی کے خاتمے کیلئے ’’ عَلم جہاد‘‘ بلند کر رکھا ہے۔ نیب لاہور نے سال2018کے دوران کرپشن کے مختلف مقدمات میں ملزمان سے کم و بیش4 ارب روپے کی وصولی ممکن بنائی جبکہ1ارب20کروڑ سے زائد ملکی خزانے اور متعلقہ حقداروں میں تقسیم کئے جاچکے ہیں۔ ریکوری کے حوالے سے سرفہرست فیروز پور ہاؤسنگ سوسائٹی کیس رہا جس میں نیب لاہور کی تاریخی ریکوری2 ارب 22کروڑ مالیت کی رہی اسکے علاوہ ماڈل ہاؤسنگ انکلیو کے 696متاثرین کو62کروڑ روپے لوٹائے گئے، ایلیٹ ٹاؤن کیس کے450 متاثرین میں 36کروڑ روپے تقسیم کیے گئے تاہم 56 کمپنیز کیس میں کروڑوں روپے کی وصولی جاری ہے علاوہ ازیں خیابان امین ہاؤسنگ سوسائٹی کیس میں ساڑھے 4 ارب مالیت کے پوزیشن لیٹرز(Possession Letters) متاثرین کو دلوائے گئے تاہم دوسری بڑی بلواسطہ ریکوری نیشنل بینک، لاہور برانچ کی ہوئی جس میں83کروڑ80 لاکھ روپے برآمدگی کے بعد مزکورہ رقم کی حکومتی خزانے میں منتقلی جاری ہے۔ نیب لاہور نے سال 2018کے دوران تقریبا20 ارب مالیت کے74کرپشن ریفرنسز احتساب عدالتوں میں داخل کئے جن میں معروف میگا کرپشن کیسز ایون فیلڈ ریفرنس، اسحاق ڈار کے خلاف آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس کا ریفرنس، آشیانہ اقبال کرپشن کیس کا ریفرنس ، صاف پانی کمپنی کیس ریفرنس، لاہور پارکنگ کمپنی کیس ریفرنس کے علاوہ سابق چیئر مین متروکہ وقف املاک بورڈ، آصف اختر ہاشمی کے خلاف ریفرنس پنجاب پاور ڈویلپمنٹ کمپنی(PPDC) کے چیف فنانشل آفیسر اکرام نوید کیخلاف کرپشن ریفرنس ، چیف ایگیزیکٹو، پاکستان انڈسٹریل ڈویلپمنٹ کارپوریشن (PIDC)خالد محمود چڈہ کیخلاف ریفرنس ,ہوم لینڈ رئیل اسٹیٹ ریفرنس، احد خان چیمہ کیخلاف آمدن سے زائد اثاثہ جات کے کیس میں ریفرنس شامل ہیں جن پر معزز احتساب عدالتوں میں سماعت جاری ہے تاہم نیب لاہور کیجانب سے کرپشن ریفرنسزمیں ملزمان کوسزائیں دلوانے کا تناسب
(Conviction Rate) 75فیصد رہا ہے۔ سال 2018کے دوران نیب لاہور حکام کیجانب سے 215 ملزمان کی گرفتاری عمل میں لائی گئی ۔گرفتار شدہ ملزمان میں سابق وزیر اعلی پنجاب شہباز شریف، ایم این اے خواجہ سعد رفیق، ایم پی اے خواجہ سلمان رفیق،ملزم قیصر امین بٹ، سابق ایم پی اے حافظ میاں محمدنعمان،سابق سینیٹر عمارگلزارکے علاوہ سابق وزیر اعظم کے پرنسپل سیکرٹری ملزم فواد حسن فواد
کے علاوہ مشہور بیورو کریٹ ملزم احدخان چیمہ کی گرفتاری شامل ہے۔گجرات پولیس فنڈز میں مبینہ بدعنوانی کے الزام میں ایس ایس پی رائے اعجاز جنہیں سندھ سے گرفتار کیا گیا بھی گرفتار ملزمان میں شامل ہیں۔ اسکے علاوہ چوہدری شجاعت حسین، چوہدری پرویز الہی، چوہدری مونس الہی، عبدالعلیم خان، حمزہ شہباز، سلمان شہباز شریف اور رانا ثناء اللہ وغیرہ کے خلاف مختلف کرپشن کیسز میں تحقیقات جاری ہیں جنہیں جلد از جلد منطقی انجام تک پہنچا دیا جائیگا۔ و پرائیویٹ سیکٹر میں مبینہ بدعنوانی کے خلاف دگنی شکایات جمع کروائی گئیں جنکی تعداد10094ہے جو عوام کے نیب پر بھرپور اعتماد کی ضامن ہیں تاہم مذکورہ شکایات میں سے بڑی تعداد ڈی جی نیب لاہور کو کھلی کچہریوں کے دوران موصول ہوئیں۔تما م شکایات میں سے نیب حکام کی جانب سے9207 شکایات کو انتہائی قلیل مدت میں نمٹا دیا گیاتاہم312شکایات کی تحقیقات (CVs)شروع کرنے کے احکامات صادر کئے گئے جن میں سے 253ویری فکیشن مکمل کر دی گئی ہیں اس حوالے سے چیئر مین نیب جسٹس جاوید اقبال کیجانب سے شکایات کی تحقیقات (Complaint Verification) کیلئے2ماہ کا دورانیہ مقرر کیا گیا ہے جس پر باقاعدہ طور عملدرآمد جاری ہے۔ نیب لاہور میں سال2018کے دوران 207انکوائریاں شروع کی گئیں جن میں107انکوائریوں کو مکمل کر دیا گیا تاہم36انکوائریاں انویسٹی گیشن(Investigation) کے مراحل میں داخل ہوئیں۔ علاوہ ازیں بیک لاگ کو عبور کرتے ہوئے نیب تفتیشی حکام نے مجموعی طور پر 44تحقیقات کو منطقی انجام تک پہنچایا۔ ڈی جی نیب لاہور کاکہناہے کہ بدعنوانی کے خلاف زیرو ٹالرنس کی پالیسی پر عمل پیرا ہیں جبکہ تمام میگا کرپشن مقدمات کو صرف اور صرف ٹھوس شواہد اور میرٹ کی بنیاد پر قانون کے مطابق منطقی انجام تک پہنچایا جا رہا ہے۔نیب کی نظر میں تمام ملزمان برابر ہیں چاہے کوئی کتنے ہی اثر و رسوخ کا حامل کیوں نہ ہو۔ نیب لاہور تمام قانونی تقاضے پورے کرتے ہوئے کرپشن و بدعنوانی کے خلاف اقدامات بھرپور انداز میں جاری رکھے گا اور بدعنوانی کے سد باب کیلئے کسی قسم کی گنجائش کے حق میں نہیں۔

Back to Conversion Tool
Urdu Home

Translation

اداریہ

آج کی تصویر

مقبول ترین

Whatsapp نیوز سروس

Advertise Here

ضرورت نمائیندگان

روزنامہ جواب

ضرورت نمائیندگان

Coverage

Currency

WP Facebook Auto Publish Powered By : XYZScripts.com