We are committed to reporting the facts and in all situations avoid the use of emotive terms.

بریکنگ نیوز
english logo

ایڈز کے مریض کو اچھوت سمجھنے کی روایت کا خاتمہ ہونا چاہیئے، وزیر صحت

ایڈز کے مریض کو اچھوت سمجھنے کی روایت کا خاتمہ ہونا چاہیئے، وزیر صحت

ایڈز کے مریض خود کو تنہا نہ سمجھیں ، ان کے علاج کے لئے تمام سہولیات مفت فراہم کی جا رہی ہیں
ڈاکٹر یاسمین راشد کی ایڈز سے آگاہی کے عالمی دن کے حوالے سے واک کے موقع پر گفتگو
سٹوڈنٹس کو دوران تعلیم ہی عملی زندگی کے چیلنجز سے آگاہ ہونا چاہیئے،بین الاقوامی کانفرنس سے خطاب
لاہور(یو این این )وزیر صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشدنے کہا ہے کہ ایڈز کے مریض کو اچھوت سمجھنے کی روایت کا خاتمہ وقت کی اہم ضرورت ہے۔ ایڈز کی وجہ صرف جسمانی تعلقات ہی نہیں بلکہ خون کے غیر محفوظ انتقال اور موروثی طور بھی ایڈز ہوسکتی ہے۔ ایڈز کے مریض خود کو تنہا نہ سمجھیں ۔ ان کے علاج کے لئے تمام سہولیات فراہم کی جا رہی ہیں۔ ایڈز سے آگاہی کے عالمی دن کے حوالے سے زندگی کے مختلف طبقوں کی واک کی قیادت کرتے ہوئے انہوں نے واضح کیا کہ ایڈز لا علاج نہیں مرض نہیں۔ پنجاب حکومت کے تحت ایڈز کا بالکل مفت علاج فراہم کیا جاتا ہے۔ محکمہ صحت کے زیر اہتمام واک ڈی جی ہیلتھ سروسز آفس سے پنجاب اسمبلی تک کی گئی۔ ڈی جی ہیلتھ ڈاکٹر منیر احمد، پراجیکٹ ڈائریکٹر ایڈز کنٹرول پروگرام ڈاکٹر عاصم الطاف،ڈپٹی سیکرٹری ڈاکٹر یداللہ اور شہریوں کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔میڈیا سے گفتگو میں وزیر صحت نے کہا کہ ایڈز سے بچاؤ کے لئے ایڈز سے آگاہی ضروری ہے۔ایڈز سے بچنے کے لئے انجیکشن کا محفوظ استعمال بہت ضروری ہے۔منشیات کے عادی افراد میں ایڈزکے زیادہ خطرات ہوتے ہیں۔ ایڈز کے عالمی دن کے موقع پر اس موذی مرض سے بچاؤ اور ایچ آئی وی کے مریضوں سے اظہار یکجہتی کا عزم کرنا ہوگا۔ڈاکٹر یاسمین راشد نے میڈیا کے سوالات پر جواب دیا کہ تحریک انصاف کی حکومت کی 3ماہ کی کارکردگی سب کے سامنے ہے۔ مختصر مدت میں ہم نے باتوں کی بجائے عملی اقدامات کئے۔ یہ محض آغاز ہے۔ وزیراعظم عمران خان نے 100روزہ کارکردگی پر اپنے خطاب میں حکومتی اقدامات کے تمام پہلوؤں کا احاطہ کیا۔ اپوزیشن تنقید ضرور کرے لیکن جھوٹ نہ بولے۔ تنقید کرنے والوں کا اپنا دامن عوامی خدمت کے جذبے سے خالی ہے۔دریں اثنا نور انٹرنیشنل یونیورسٹی کے زیراہتمام ’طبی تعلیم میں مستقبل کے رجحانات‘ کے موضوع پر انٹر نیشنل میڈیکل ایجوکیشن کانفرنس سے بطور مہمان خصوصی خطاب میں وزیر صحت پنجاب نے کہا کہ میڈیکل تعلیم کے چیلنجز میں روز بروز اضافہ ہو رہا ہے۔ نوجوان سٹوڈنٹس کو دوران تعلیم ہی عملی زندگی کے چیلنجز سے آگاہ ہونا چاہیئے۔ انہوں نے زور دیا کہ خدمت خلق کے جذبے کے بغیر ڈاکٹری پیشے کے تقاضے پورے نہیں ہوسکتے۔بین الاقوامی طبی کانفرنس میں سلگتے موضوع پر ماہرین طب کو جمع کرنا اچھا کام ہے۔ میں نے محکمہ صحت کی ذمہ داریاں سنبھالنے کے بعد صحت کے شعبے میں اصلاح کا بیڑہ ایک مشن کے طور پر اٹھایا۔ صحت کے شعبے میں تبدیلی آگئی تو تمام شعبوں میں تبدیلی نظر آئے گی۔ نجی اور سرکاری طبی تعلیم کے اداروں کے تعاون سے جامع اصلاحات متعارف کرارہے ہیں۔ہسپتالوں کی ایمرجنسی اور ماں بچے کی صحت پر سب سے زیادہ فوکس ہے۔

Translation

اداریہ

آج کی تصویر

مقبول ترین

Whatsapp نیوز سروس

Advertise Here

ضرورت نمائیندگان

روزنامہ جواب

ضرورت نمائیندگان

Coverage

Currency

WP Facebook Auto Publish Powered By : XYZScripts.com