We are committed to reporting the facts and in all situations avoid the use of emotive terms.

بریکنگ نیوز
english logo

ایل پی جی کی قیمت میں مزید10 روپے فی کلواضافہ

ایل پی جی کی قیمت میں مزید10 روپے فی کلواضافہ

،120روپے گھریلو سلنڈر ، 450روپے کمرشل سلنڈر کا بلا جواز اضافہ ۔
اوگرہ کی طرف سے اگست کیلئے ایل پی جی صارفین کیلئے 132روپے فی کلو قیمت مقرر کی گئی تھی
5ستمبر 2018کو ملک گیرہڑتال کا اعلان، خیبر سے کراچی کا گیس سپلائی بند کر دی جائے گی، عرفان کھوکھر
لاہور (یو این این ) چیئرمین ایل پی جی ڈسٹری بیوٹرز ایسوسی ایشن پاکستان ، چیئر مین و فاؤنڈر ایل پی جی انڈسٹریز ایسوسی ایشن آف پاکستان (ایل پی جی چیمبر آف پاکستان) عرفان کھوکھر نے کہاہے کہ گیس مافیا کی طرف سے حکومت اور غریب عوام کیلئے عید گفٹ آگیاہے اور مافیا نے چند روز میں ایل پی جی کی قیمتوں میں دوسری بار اضافہ کر دیا ہے جس سے ایل پی جی کے نرخ مزید10 روپے فی کلو،120روپے گھریلو سلنڈراور کمرشل سلنڈر میں 450روپے بلا جواز اضافہ کر کے عوام کی جیبوں پر ڈاکہ ڈالا ہے ۔ انہوں نے کہا ہے کہ لوکل ایل پی جی پروڈیوسرگیس مافیا بن گیاکیونکہ امپورٹ نہ ہونے کے برابرہے جس کی وجہ سے 95%فیصد لوکل ایل پی جی کو بین الاقوامی قیمت سے بھی زیادہ مہنگے نرخوں پر فروخت کیا جا رہا ہے ۔
گزشتہ روز میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے چیئرمین ایل پی جی ڈسٹری بیوٹرز ایسوسی ایشن پاکستان و فاؤنڈر ایل پی جی انڈسٹریز ایسوسی ایشن آف پاکستان عرفان کھوکھر نے بتایا کہ ملک بھر میں ایل پی جی قیمتوں میں اوگرہ نوٹیفیکیشن کے بغیر ہی3 دن میں دوسری بار اضافہ کر دیا ہے جبکہ ایل پی جی مافیا کی ملی بھگت کے باعث مزید قیمتیں بڑھنے کا اندیشہ ہے ۔ مافیا کی بلیک میلنگ کے باعث ایل پی جی کی کراچی اور لاہور میں فی کلو قیمت 150روپے ، میاں چنوں، فیصل آباد، بہاولپور، ملتان، راجن پور 160روپے فی کلو،ڈیرہ اسماعیل خان، سوات170روپے فی کلو، مری، نتھیا گلی 180 روپے فی کلو، گلگت بلتستان 200روپے فی کلوتک جا پہنچی ہے ۔حکومت کی ایل پی جی پالیسی 2016 میں895 روپے گھریلو سلنڈر اور 75روپے فی کلو ایل پی جی کی جگہ175روپے فی کلو سے تجاوز کر گئی۔ایل پی جی پالیسی 2016کے مطابق ایل پی جی پروڈیوسر کی قیمت 30000فی میٹرک ٹن مقرر کرنے کا مطالبہ۔ 14جون 2018 سے JJVL ایل پی جی پیداواری پلانٹ کی بندش سے ایل پی جی انڈسٹری میں بہت بڑا خلاء پیدا ہو گیا جس سے تقریباً13000 میٹرک ٹن فی ماہ کمی واقع ہوئی ہے جس کی وجہ سے ایل پی جی انڈسٹری کو 26000 میٹرک ٹن کی کمی کا سامنا اور SSGCاور حکومت کو 2ماہ میں ٹوٹل 2ارب 43 کڑوڑ اور ٹیکس کی مد میں 472 ملین کا نقصان ہوا ہے۔ کسی بھی قیمت پر پلانٹ چالو کر کے سپلائی بحال کی جائے،ایل پی جی ڈسٹری بیوٹرز ایسوسی ایشن پاکستان کا مطالبہ۔ قیمتیں بڑھنے سے غریب عوام پر بوجھ بڑھ گیا۔ سگنیچر بونس اور پریمیم بونس کے نام پر جگہ ٹیکس ختم کرنے پر عرفان کھوکھر کا اوگرہ کو خراج تحسین۔ لوکل ایل پی جی پیداوار کو تمام ایل پی جی مارکیٹنگ کمپنیوں میں میرٹ کی بنیاد پر تقسیم کیا جائے اور شرط عائد کی جائے کہ اس میں 50% امپورٹ کو شامل کر کے صارفین کیلئے ایک قیمت مقرر کی جائے تو قیمت میں 30فیصد کمی آسکتی ہے۔ایل پی جی پروڈیوسر مافیا کو لگام ڈالنا ضروری ہو گیا۔30 اگست 2018 کو لاہور میں بہت بڑا مظاہرہ کیا جائے گا۔ اگر ایل پی جی کی قیمتوں کو قابو نہ کیا گیا تو 5 ستمبر 2018 کو خیبر سے کراچی تک شٹر ڈاؤن اور پہیہ جام ہڑتال ہوگی۔ایل پی جی ڈسٹری بیوٹرز ایسوسی ایشن پاکستان کا AC طیب طاہر کی برطرفی اور عرفان کھوکھر کے خلاف تھانہ شرقپور میں درج 336/18 جھوٹہ مقدمہ واپس لینے کا مطالبہ۔

Translation

اداریہ

آج کی تصویر

مقبول ترین

Whatsapp نیوز سروس

Advertise Here

ضرورت نمائیندگان

روزنامہ جواب

ضرورت نمائیندگان

Coverage

Currency

WP Facebook Auto Publish Powered By : XYZScripts.com