We are committed to reporting the facts and in all situations avoid the use of emotive terms.

بریکنگ نیوز
english logo

اخوت سستے گھروں کی تعمیر کے لیے پانچ لاکھ تک بلا سود قرضے دے گی ،محمود الرشید

اخوت سستے گھروں کی تعمیر کے لیے پانچ لاکھ تک بلا سود قرضے دے گی ،محمود الرشید

پہلے مرحلہ میں لودھراں، چشتیاں اور رینالہ خورد شامل ، گھروں کی تعمیر کا باقاعدہ افتتاح وزیر اعظم عمران خان آئندہ ماہ کریں گے
دوسرے مرحلہ میں جہلم، چنیوٹ اور سیالکوٹ میں 10000 گھر تعمیر کیے جائیں گے، ان شہروں میں ترقیاتی کام جاری ہیں
لینڈ بنک میں 2 لاکھ کنال اراضی جمع ہوچکی ہے ، لاہور میں اراضی کی نشاندہی کا عمل جاری، جنوری میں اعلان کیا جائے گا
لاہور(یو این این)وفاقی ٹاسک فورس برائے ہاؤسنگ کا خصوصی اجلاس جمعہ کے روز منعقد ہوا۔ صوبائی وزیر ہاؤسنگ میاں محمود الرشید اور چیئرمن وفاقی ہاؤسنگ ٹاسک فورس ضیغم رضوی نے مشترکہ صدارت کی۔ اجلاس میں چیئرمین اخوت فاؤنڈیشن ڈاکٹر امجد ثاقب، یعقوب اظہار اور ہاؤس بکڈنگ فنانس کارپوریشن کے نمائندگان بھی شامل تھے۔ اجلاس میں 50 لاکھ گھروں کی اب تک کی پیشرفت اور مستقبل کے لائحہ عمل پر تبادلہ خیال کیاگیا۔ اخوت فاؤنڈیشن کے تعاون سے غریب ترین افراد کے لیے سستے گھروں کی تعمیر کے جوائنٹ وینچر پر بات چیت بھی اجلاس میں ہوئی۔ میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے میاں محمود الرشید نے کہا کہ اخوت فاؤنڈیشن سستے گھروں کی تعمیر کے لیے ایک سے پانچ لاکھ تک کے بلا سود قرضے فراہم کرے گی اور حکومت اخوت فاؤنڈیشن سے ملکر 10 سے 15 ہزار گھر آئندہ جون تک تعمیر کرنے کا ارادہ رکھتی ہے۔ اس ضمن میں وفاقی حکومت کی جانب سے فنڈز آئندہ ماہ تک موصول ہو جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ عوام کو قرضوں کی فراہمی اور انکی واپسی کا نظام بھی بہت جلد وضع کیا جا رہا ہے۔ اخوت فاؤنڈیشن اس سارے عمل کا باقاعدگی سے معائنہ بھی کرے گی تا کہ کسی قسم کی پیچیدگی سے بروقت نمٹا جا سکے۔ میاں محمود الرشید نے مزید بتایا کہ پہلے مرحلے میں لودھراں، چشتیاں اور رینالہ خورد شامل ہیں جہاں گھروں کی تعمیر کا باقاعدہ افتتاح وزیر اعظم عمران خان آئندہ ماہ کریں گے۔ دوسرے مرحلے میں جہلم، چنیوٹ اور سیالکوٹ میں 10000 گھر تعمیر کیے جائیں گے۔ اس مقصد کے لیے ان شہروں میں ترقیاتی کام جاری ہیں۔ نیا پاکستان ہاؤسنگ سکیم کے لیے دستیاب اراضی کے حوالے سے سوال کے جواب میں میاں محمود الرشید نے کہا کہ اب تک لینڈ بنک میں 2 لاکھ کنال اراضی جمع کی جا چکی ہے۔ انہوں نے مزید بتایا کہ لاہور میں 3 سے 4 جگہوں پر اراضی کی نشاندہی کا عمل جاری ہے اور اس ضمن میں جنوری میں اعلان کیا جائے گا۔ انہوں نے یہ بھی بتایا کہ نیا پاکستان ہاؤسنگ سکیم کے حوالے سے حکومت اور بیوروکریسی ایک ہی صفحہ پر ہیں۔ پنجاب کے تمام 36 اضلاع میں ڈپٹی کمشنرز نے زمین کی نشاندہی کر دی ہے۔ دیکھنا یہ ہے کہ کون سی زمین گھروں کی تعمیر کے لیے استعمال کی جائے۔ اس مقصد کے لیے جلد سب کمیٹیاں تشکیل دی جائیں گی جو متعلقہ ڈپٹی کمشنرز اور مقامی ایم پی ایز پر مشتمل ہوں گی۔

Translation

اداریہ

آج کی تصویر

مقبول ترین

Whatsapp نیوز سروس

Advertise Here

ضرورت نمائیندگان

روزنامہ جواب

ضرورت نمائیندگان

Coverage

Currency

WP Facebook Auto Publish Powered By : XYZScripts.com